google algorithm update panda penguin hummingbird 166

گوگل الگورتھم اپڈیٹس اور پانڈا پنگوئن ہمنگ برڈ

گوگل الگوتھم

گوگل کے مشہور الگورتھم میں گوگل پانڈا اور گوگل پینگوئین ہیں یہ خاص طور پر اپ کو جاننا چاہیے کہ یہ کیسے کام کرتے ہیں پہلے آپ اس کو سمجھیں کہ گوگل سرچ انجن کیسے کام کرتی ہے اگر آپ گوگل میں لکھیں ہاؤ سرچ ورکس تو آپ کو گوگل میں اسکا پیج ملے گا جس پر پوری تفصیل لکھی ہو گئی اسکا خلاصہ کچھ یوں ہے
گوگل کہتا ہے کہ بلینز آف سرچیز روزانہ ہوتی ہیں، پہلے ہم ویب سائیٹ کو کرال کرتے ہیں یا بوٹس جو کرال کرتے ہیں بوٹس اصل میں سوفٹ وئیر ہوتے ہیں پھر وہ انڈیکس کرتے یہ ہیں
یعنی سائیٹ گوگل کے ڈیٹا بیس میں ا گئی اب نیا مرحلہ آتا ہے الگورتھم ہے اب گوگل پر کوئی سرچ کرتا ہے تو وہ کچھ سرچ کرتا ہے تو گوگل اسکو بہترین جواب سامنے لاتا ہے یعنی سب سے بہترین پیج وہ سامنے لائے گا گوگل کے پہلے پیج پر دس ریزلٹ آتے ہیں اس کے لئے گوگل کا ایلگوریم فیصلہ کرتا ہے کہ کونسا پیج سب سے بہتر ہے اورر گوگل وہ ویب پیج تلاش کرتا ہے جو سب سے بہتر جواب دے سکے یہ ترتیب گوگل کے لئے الگورتھم کرتے ہیں کہ وہ بہترین ویب سائیٹ کو سامنے لاتے ہیں اور دوسری ویب سائیٹس پر بھی نظر رکھتے ہیں اس طرح انکی رینکنگ اوپر نیچھے ہوتی رہیتی ہے گوگل دو سو سے زیادہ فیکٹرز کو سامنے رکھ کر فیصلہ کرتا ہے کہ اس ویب سائیٹ کو کیا رینکنگ دینی ہے بہت سارے فیکٹرز ویب ماسٹرز کو پتہ ہوتے اور بہت سے گوگل نے خفیہ رکھے ہوئے جو گوگل کے امپلائیز کو بھی نہیں پتہ

اس کے بعد آتا ہے سپیم اگر آپ غلط طریقہ سے اچھی رینکنگ حاصل کرنی کی کوشش کرتے ہیں، غلط طریقے سے لنک بناتے ہیں، یہ اس کی گائیڈ لائن کے خلاف جاتے ہیں ، یا ان نیچرل لنک بنا رہئے ہیں تو گوگل آپ کو بین کرتا ہے اور وہ سائیٹ گوگل کے سرچ میں نہیں ائے گی

گوگل ایگورتھم کی ہسٹری دیکھنے کے لئے موز ڈاٹ کام پر دیکھ سکتے ہیں

گوگل الیگوریتھم کوالٹی گائیڈ لائن

گوگل ویب ماسٹر گائیڈ لائین گوگل میں سرچ کریں اور اسکو غور سےبڑھیں

گوگل کہتا ہے ڈیزائن اچھا ہو اور کوئی بھی آرام سے اسکو دیکھ سکے اسکی گائیڈ لائن میں تفصیل دی گئی ہے
اس گائیڈ لائین کو پڑھنا بہت ضروری ہے اگر آپ کوایس ای او میں اگے بڑھنا ہے

گوگل اپنے الگوریتھم کو سال میں پانچ سے چھ سو بار اپ ڈیٹ کرتا ہے

 پانڈا پینگوئین اور دوسرے الگرتھم گوگل الگورتھم

گوگل پانڈا الگرتھم آپ کی ویب سائیٹ کو کب ہٹ کرتا ہے اس کے پانچ اہم پوائیٹ یہ ہیں ان میں زیادہ آن پیج کے حوالے سے ہیں

لو کوالٹی کنٹینٹ

لو کوالٹی کنٹینٹ سے مراد ایک شخص نے کوئی ویب سائیٹ بنائی لیکن اسکا کنٹینٹ ایسا نہیں کو گوگل کے معیار پر پورا اترا ہو جس سے یوزر مطمئین نہ ہو نہ اس کے کی ورڈز ٹھیک ہیں نہ اسکا سٹریکچر ٹھیک ہے نہ ٹائٹیل ٹھیک ہے نہ ڈسکرپشن معیاری ہے اور کنٹنیٹ معیاری ہے

کاپیڈ کنٹینٹ

کسی دوسری ویب سائیٹ سے کاپی کیا گیا کنٹینٹ

تھن کنٹینٹ

تھن کنٹینٹ سے ایک تو مراد یہ ہے کم مواد ہوتا ہے لیکن کبھی کبھی کم مواد بھی ٹاپک کا احاطہ کرلیتا ہے اس لئے یہاں اس سے مراد نامکمل مواد مراد ہے یا ادھورا مواد

ابؤ دی کانٹیٹ

جب اپ سائیٹ کھولتے ہیں تو جو کچھ آپ کو نظر آتا ہے ویب سائیٹ کے اس حصے کو ابوو ڈی فولڈ کہا جاتا ہے یعنی سکرول کئے بغیر جو حصہ آپ کو نظر آ تا ہے، گوگل کہتا ہے اس میں کنٹینٹ لازمی رکھنا ہے اگر ایسا نہ ہوتا تو پانڈا کا آپ شکار ہو سکتے ہیں کچھ لوگ اوپر ایڈز وغیرہ سے بھی بھر دیتے ہیں تو پانڈا کا شکار ہو سکے اس لئے کچھ نہ کچھ کنٹینٹ آپ کو رکھنا چاہئے

بیڈ ویب سائیٹ سٹریکچر

اس سے مراد نہ آپ کا سائیٹ میپ ہے نہ آپ کی نیوگیشن ٹھیک ہے نہ پتہ چل رہا ایک لنک سے دوسرے لنک پر کیسے جاتے ہیں یعنی لنکنگ ٹھیک ہے وغیرہ

ڈپلیکیٹ کنتینت

یہ آپ کی اپنی ویب سائیٹ میںب بھی ہو سکتے اور کیس دوسری ویب سائیٹ سے بھی کای کیا گا کنٹینٹ بھی وسکتا ہے

پینگوئین الگورتھم

یہ زیادہ تر آف پیج کے حوالے سے ہیں

ان نیچرل بیک لنکس

گوگل نے اس میں زیادہ تر ییک لنکس بنانے والوں کو ہٹ کرتا ہے ان میں وہ لوگ تھے جو ان نیچرل طریقے سے بیک لنکس بنا رہے تھے یعنی کوئی بوٹ اور سوفٹ وئیرز استعمال کر رہے تھے جو ایک ہی دن میں سیکڑوں بیک لنکس بنا دیتے تھے گوگل پینگوئین الگورتھم نے ان نیچرل لنکس کے جو بھی طریقے ہیں ان سب کو اس نے تلاش کیا اور ان ویب سائیٹس کو ہٹ کیا جو یہ کر رہے تھے، اور وہ بین ہو گئے ڈی رینک ہو گئے یا پینلائیز ہو گئے

پیڈ بیک لنکس

وہ بیک لنکس جو آپ کسی سے خریدتے ہیں یا کسی کو پیسے دے کر کسی بھی طرح بنواتے ہیں اس طرح کے لنکس ایک غیر ضروری ہوتے ہیں اور ریلیٹڈ نہیں ہوتے انکا ویب سائیٹس کے ٹاپک کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہوتا یا ایسی سائیٹس پر ہوتے ہیں جو گوگل کے معیار کے مطابق نہیں ہوتے

(کی ورڈ سٹفنگ ( اوور اپٹیمائزیشن

گوگل ہمیشہ قدرتی انسانی انداز اور بیلنس پر زور دیتا ہے، ایس ای اؤ میں بیلنس پر زور دیا جاتا ہے اگر آپ نے ایسا کیاتو پینگوئین کا شکار ہو سکتے، یعنی آپ ایک کی ورڈ کی بار بار ان نیچرل انداز میں بار بار استعمال کرنا یعنی ٹائیٹل میں دو بار کی ورڈ کو استعمال کرنا
ٖاسی طرح ڈسکرپشن میں بھی بار بار کی ورڈز کو استعمال کرنا اس کو کی ورڈ سٹفنگ میں آتا ہے اور پینگوئین اس لئے بنایا گئے ہے اس لے ڈسکرپشن میں بھی ایک ہی بار استعمال کریں تو بہتر ہے

بیڈ اینکر ٹیکسٹ

اس سے مراد یہ ہے کہ جب بھی اپ کہیں لنک بناتے ہیں تو ان لنک کے ساتھ ایک ٹیکسٹ ہوتا ہے جس پر کلک کرنے سے آپ اس سائیٹ پر چلے جا تے جو اس لنک کے ٹیکسٹ پہلے بہت سی جگہ مختلف قسم جگہوں پر مختلف قسم کے کی ورڈز لکھتے تھے جو سپیمنگ میں آتا ہے اپ اپنی سائیٹ کا لنک بنا رہے تو اپنی سائیٹ کا نام دیں نہ کہ ہر دوسرے فارم پر کوئی دوسرا کی ورڈ ٹارگٹ کریں

irrelevant backlinks اریلیوینٹ بیک لنکس

اگر اپ اپنی ویب سائیٹ کے لئے بیک لنکس بناتے ہیں تو ویب سائیٹ کا آپ کی ویب سائیٹ کے ٹاپک سے متعلق ہونا چاہیے یہ نہیں کہ آپ آپ کی سائیٹ ایس ای او کی ہے اور آپ سبزی کی ویب سائیٹ پر اپنے بلاگ کے لئے بیک لنک بنا رہے ہی

جو کچھ آپ نے لکھا ہوا یہ دوسرے کو مطمئین کر لے گا جو اس سائیٹ پر آتا ہے اگر آپ کا جواب ہاں میں ہے تو امید ہے کو گوگل کے یہ الگورتھم ہٹ نہیں کریں گے آپ کی گرئیمر اور سپلینگ ٹھیک ہیں اور اسکی ارگانئیزیشن ٹھیک ہے جیسے ایک ارٹیکل میں نےیوزر کے لئے اچھا خاصا مواد لکھا اسکو بہترین انداز سے ترتیب دیا اس کے ریلیٹڈ ارٹیکلز بھی آپ نے اس ارٹیکل میں پوسٹ کئے اور آپ نے تصاویر بھی دیں ایک ادھ وڈیو بی دی اور آپ کے کی ورڈز ٹائیٹل اور ڈسکرپشن بھی ٹھیک ہے اور آخر میں سمری بھی دی کچھ لوگوں نے اسکو شئیر بھی کیا کچھ لوگوں نے کمنٹس بھی کئے اور آپ نے جواب بھی دیئے تو سمجھ لیں اپ آپ لوگوں  کے لئے کچھ اچھا ہی لکھ رہے اور یہ سب کچھ کاپی تو نہیں کیا گیا آپ نے کم از کم 500 الفاظ سے اوپر لکھا کیا آپ کی سائیٹ میں ابوو دی فولڈ میں سے کچھ ٹھیک ہے، کچھ کنٹینٹ نظر آ رہا سارے ایڈز تو نہیں ہیں اپ کی ویب سائیٹ کا سٹریکچر بھی ٹھیک ہے مینواور سسب مینتوز اور کیٹگری وغیرہ بہترین بنائی گئی ہے سائیٹ میپ دیا ہوا یہ کچھ کچھ آپ نے کیا تو آپ پانڈا سے بچ گئے

 پینگوئین

آپ ان نیچرل لنکس تو نہیں بنا رہے۔ بوٹس اور سوفٹ وئیر تو ستعمال نہیں کر رہے ٹائیٹل ڈسکرپشن پرما لنکس، میں دو بار کی ورڈ تو استعمال نہیں کر رہے یعنی اور اپٹیماز تو نہیں کر رہے یہ سب اورآپٹیمائیز میں اتا ہے اور ارٹیکل میں  کی ورڈ ڈینسٹی تین فیصد سے کم ہے اور بیک لنکس خرید تو نہیں رہے جہاں اپ لنکس بنا رہے وہاں آپ نے اینکر ٹیکسٹ میں مختلف کی ورڈز تو استعمال نہیں کئے
آپ کی سائیٹ کسی بھی ٹاپک پر ہے جیسے فیشن پر اور آپ اپنے بیک لنکس کسی ایسی سائیٹ پر تو نہیں بنا رہے جن کا آپ کی سائیٹ سے تعلق نہیں بنتا ہے
گر آپ چاہتے ہیں کہ یہ دونوں الگورتھم آپ کو ہٹ نہ کریں تو آپ خود سے سوال کریں کہ یہ

گوگل اب اتنا ایڈوانس ہو گیا ہے کہ اسکو دھوکہ دینا مشکل تر ہو گیا ہے اور وہی لوگ کامیاب ہوتے ہیں جو سہی کام کر رہے
جو چیزیں بتائی گئیں ہیں اگر یہ چیزیں آپ کی سائیٹ میںپانچ دس فیصد تک ہوں تو گوگل کوئی بڑی سزا شاید آ پکو نہ دے یا زیادہ سے زیادہ وہ آپ کی سائیٹ کے ان لنکس کی رینکنگ کم کردے گا لیکن اگر یہ چیزیں چالیس پچاس تک آپ کی سائیٹ میں پائی جاتی ہیں تو پھر گوگل بڑا ایکش لے گا اور آپ کی سائیٹ کو گوگل سے ڈی انڈیکس کر دے گا اور اپ کی سائیٹ گوگل میں نظر نہیں ائے گی یا آپ سائیٹ کی رینکنگ ڈاؤں ہو جائے گی اور اگر آپ کے ساتھ ایسا ہو گیا ہے تو آپ کو ایک ای میل آئے گی جس میں بتایا جائے گا کہ آپ کی سائیٹ کن وجوہات کی وجہ سے پانڈا کےشکنجے میںآ گئی ہے اور یہ آپ کو گوگل ویب ماسٹر ٹولز کے ان باکس میسجز میں بھی نظر ائے گا زیادہ تر آپ کو میل نہیں بھی ملتی
آپ کو کیسے پتہ چلے گا کہ آپ پانڈا یا پینگوئن کا شکار ہو چکے ہیں ٹو اپ گوگل ویب ماسٹر کے ٹول میں چیک کریں گے یا اپ گوگل اینالیکٹس میں دیکھیں گے تو آپ دیکھیں گے اپ کی ٹریفک رفتہ رفتہ کم ہو رہی ہے تو سمجھ لیں آپکی ویب سائیٹ کو کسی گوگل کے الگرتھم نے ہٹ کیا ہے
آپ ویب سائیٹس کو یہاں بھی چیک کر سکتے گوگل سینڈ باکس چیکر کے ذریعے بھی چیک کر سکتے جس کا یو آرایل یہ ہے
http://pixelgroove.com/serp/sandbox_checker/
https://barracuda.digital/panguin-seo-tool/

ان میں آپ آسانی سے دیکھ سکتے اور اندازہ لگا سکتے کہ اپ کو گل کے کس الگورتھم نے افیکٹ کیا ہے جب آپ کو مرض پتہ چل جاتا ہے تو آپ کو علاج کرنے مین اسانی ہوتی ہے جب آپ ان ٹولز اور ویب سائیٹ میں دیکھ گے کہ کونسی جگہ آپ کی ٹریفک کم ہوئی تو پھر دیکھ سکتے کہ کس الگورتھم نے ہٹ کیا ہے
ایک اور طریقہ یہ ہے کہ آپ جب اپ نے گوگل اینلیٹک میں دیکھا کہ آپ کا ٹریفک کس دن یا کس ماہ کم ہوا تو اس کے بعد آپ موز ڈاٹ کام کے اس پیج پر جائیں جہاں اپ گوگل الگورتھم کی ہسٹری اور اپ ڈیٹ کے بارے میں بتایا جاتاہے وہ یہ ہے
https://moz.com/google-algorithm-change
یہاں دیکھیں گوگل کی کیا اپ ڈیٹ ہے

کس کا اپ ڈیٹ آیا تھا جس سے آپ کو آسانی ہو گی کہ اپ کی ویب سائیٹ کو کس الگورتھم نے ہٹ کیا ہے جس نے ہٹ کیا ہے اس کے حساب سے اپ کام کر سکتے ہیں اس سے آپ اسی حساب سے ویب سائیٹ پر کام کرتے ہیں اور اگلی اپ ڈیٹ میں آپ کی ویب سائیٹ
گوگل الگرتھم پانڈا ریکوریمعمول پر آ جاتی اور اگر آپ نے مزید اچھا کیا ہے تو اور اوپرچلی جاتی

گل پینگوئین ریکوری

یہاں بھی ہم آٹومیٹک گوگل پینگوئیں ہٹ کی بات کریں گے یہ سائیٹ لیول کی نہیں ہوتی مطلب یہ سائیٹ کا کچھ حصہ ہٹ ہوتا ہے اور سرچ انجنز میں ٹریفک ڈاؤں ہوتی ہے جب چینچز کرنے کے بعد کچھ اپ نظر رکھیں کہ جب آپ ڈیٹ آتی ہے تو اپکی سائیٹ پر اسکا کیا اثر پڑتا ہے کیا وہ اپنی پہلی حالت پر آتی ہے کہ نہیں

فرض کریں اپ کو گوگل پینگوئن نے ہٹ کیا ہے تو آپ پہلے کی طرح گوگل اینالیٹک میں چیک کریں اور دیکھیں وہ ٹریفک کب ڈاؤن ہوئی پھر موز کے گوگل الیگورتھم چینج کے پیج میں جا کر دیکھیں کہ کونسی اپ ڈیٹ آئی تھی اور کیا اپ ڈیٹ ہوا تھا یا گوگل کا کونسا الگورتھم اپ ڈیٹ ہوا تھا اس کے علاوہ جو پیجز آپ نے طریقہ اور اسائٹس اور ٹولز گوگل پانڈا کے حصہ میں استعمال کرکے دیکھا تھا کہ آپ کی وئب سائیٹ کو کس نے ہٹ کیا ہے وہ آپ طریقہ ، ٹولز اور ویب سائیٹس کا ستعمال یہاں بھی کر سکتے ہیں

سب سے پہلے آپ نے اپنے بیک لنکس چیک کرنے ہیں اس کے لئے آپ اپنے ویب ماسٹر ٹولز کے ذریعے چیک کر سکتے کہ اس کے لئے ویب ماسٹر ٹولز کے ڈیش بورڈ میں جا کر پھر لفٹ سائیڈ میں سرچ ٹریفک پر کلک کرنے کے بعد آپ لنک ٹو یور سائیٹ پر کلک کریں گے اور وہاں اپ کو پوری لسٹ ملے گی جو اپ کی ویب سائٹ سے لنک کنکٹ ہیں آپ سب کو بار ی باری چیک کریں کہ کیا وہ لنکس گوگل کی گائیڈ لائن کے خلاف تو نہیں کہیں اپنے اپنی ویب سائٹ کے بیک لنکس وہاں تو نہیں بنا دیئے جو سائیٹس یا بلاگز گوگل کی گائیڈ لائیں کے خلاف ہیں انکو ہٹانا پڑے گا

اسکے علاوہ اگر آپ نے کہیں سے لنک خریدے ہیں اور ایسی سائیٹس پر موجود ہیں تو وہ بھی ہٹانے پڑیں گے اس کے علاوہ اگر آپنے کوئی سوفٹ وئیر استعمال کرکے اسے کوئی لنکس بنائے ہیںتو وہ لنکس بھی ہٹانے پڑیں گے

اس کے علاوہ سب آرٹیکلز میں ڈیکھنا پڑے گا کہیں ہم نے کی ورڈ سٹفنگ تو نہیں کی گئ اس کے علاوہ آپ جہاں ایسا ہوا ہے تو وہ اپ ڈیٹ کرنا پڑے گا
اگر اینکر ٹیکٹ میں جہاں جہاں بیک لنکس بنائے ہیں وہ چیک کرنے پڑیں گے انکو ٹھیک کرنا پڑے گا اور اریویلونٹ بیک لنکس کو ختم کرنا پڑے گا

ایسا بھی ہو سکتا ہے کبھی کوئی آپ کی سائیٹ کو نقصان پہنچانا چاہتا ہے تو وہ آپکی سائیٹ کے لنکس فحش سائیٹ پر ڈال دیتا ہے کبھی کوئی گیببلنگ کی سائیٹ پر بھی ڈال دیتا ہے یا کوئی اور بھی ایسا کر سکتا ہے
ان سائیٹس کو آپ وزٹ کریں تو اپ کو وہ ڈیلیٹ کرنا پڑے گا یا ایسی ویب سائیٹ ہو جس کوگوگل بین کر چکا ہے

جہاں اپ نے لنک بنائے ہیں یا کسی نے ڈال دیئے ہیں اور وہ ویب سائیٹ کا اونر انکو ریموز نہیں کر تا ہے  گوگل ویب ماسٹر میں ایک ٹول ہے ڈی آ وا ٹول کے نام سے اس کے ذریعے آپ انکو ری موو کر سکتے ہیں اس کو استعمال کرنے سے پہلے آپ اس کے بارے میں گوگل کے سپورٹ پیج پرپڑھ لیں کہ یہ کیسے کام کرتا ہے یا گوگل میں سرچ اس ٹول کے بارے میں سرچ کریں اور بہت سے آرٹیلز آ جائیں گے آپ نیل کا ارٹیل پڑھ سکتے

یہ سب کرنے کی بعد اتنظار کریں کہ کب پینگوئین کی اپ ڈیٹ آتی ہے جیسے ہی وہ آپ ڈیٹ ائی گی اپنی ویب سائیٹ میں آپ تبدیلی دیکیں گے اور آپ کی سائیٹ کی ٹریفک واپس آناشروع ہو جائےگی

اہم نوٹ

اس کے علاوہ اپ یہاں بھی چیک کر سکتے کہ گوگل کے کس الگورتھم نے آپ کو ہٹ کیا ہے اس کے لئے ایک ٹول ہے جو گوگل میں اپ سرچ کرسکتے
pixelgroove google sandbox and penalty checker tool
pixelgroove کے نام سے اسمیں اپنی سائٹ ڈالیں اور چیک کریں

گوگل سینڈ باکس وہ ہوتا ہے کہ جب نئی سائیٹ آتی ہے تو پہلے اس میں جاتی اور وہاں ری

ویو ہو کراس اسکو انڈیکس کیا جاتا ہے

 پانڈا ریکوری

فرض کریں پانڈا نے ہٹ کیا ہے تو ہم اپنی ویب سائیٹ پر پانڈا ری کوری پر کام کرتے ہیں
اپ نے کام ضرور کرنا ہوگا کچھ چینجز ضرور کرنی ہوں گی ورنہ گوگل اگلی اپ ڈیٹ میں آپ کی ویب سائیٹ کے لئے کوئی تبدیلی نہیں کرے گا اور وہ ویسے ہی رہے گی اس لئے ان چیزوں کو آپ نے اپنی سائیٹ سے ختم کرنا ہوگا جس کی وجہ سے گوگل پانڈا نے آپ کو ہٹ کیا یہ وہ پانچ اہم چیزیں ہیں جن کا ذکر اوپر آ چکا ہے جن کی وجہ سے پانڈا کسی ویب سائیٹ کو ہٹ کرتا ہے
سب سے پہلے سٹرکچر کو دیکھیں کیا وہ گوگل کے رولز کے مطابق ہے نیوگیشن مینو موجود ہے اس پر اہم لنکس دیئے ہوئے کیا آپ نے سائیٹ میپ ایڈ کیا ہے اپ کا کنٹینٹ گوگل کے معیار پر پورا اترتا ہے
اپ نے کچھ کاپی تو نہیں کیا اگر ایسا کیا ہے تو وہ سب کچھ اپنی سائیٹ سے ٹیلیٹ کریں اور ان تما م یو آ ر ایلز کو گوگل ویب ماسٹر ٹولز میںجا کر بھی ان یو آر ایلز کو ٹول کی مدد سے ری موو کرنا ہے تاکہ ناٹ فاونڈ کا ایرر نہ آئے اگر کنٹنٹ کم ہے تو اسکو بھی بہتر کرنا ہوگا اور ارٹیکلز کی لینتھ کو مزید بہتر کرنا ہوگا اگر آپ کا ارٹیکل دو تین دو ورڈز کا ہے تو یہ کم ہوگا کم از کم سان

پانچ سو سے اوپر الفاظ کا کی ورڈز لکھیں آج کل تو کم از کم ایک ہزار ورڈز کی بات ہو رہی ہے اس لئے بڑے ارٹیکلز پر توجہ دیں اور نہ صرف بڑے بلکہ اچھے اور یوزر کے لئے مفید ارٹیکلز پر توجہ دیں اور ورڈ پریس میں اپڈیٹد کا ایک پلاگ ان ہے وہ ایڈ کریں ” ڈیبلو پی موڈیفائیڈ” کے نام سے ہوگا ابو دی فولڈ ایریا کو بہتر کریں اور ڈپلیکٹ کنٹنیٹ کو اپنی ویب سائیٹ میں تلاش کریں اگر ایسا ہے تو اس کو ختم کریں ہوتا کچھ یوں ہے کہ جب اپ کہیں سے ڈیٹا کاپی کرتے ہیں تو وہ ڈپلیکٹ ہو جائے گا اور پانڈا دیکھ لے گا کہ کس نے پہلے انڈیکس کیا تھا اور اس کے علاوہ آپ کی اپنی سائیٹ میں بھی ڈیٹا ڈپلیکیٹ جو سکتا ہے جیسے آپ نے کسی سوفٹ وئیر کا ارٹیکل لکھا کچھ عرصہ بعد اس سوفٹ وئیر کا اپ ڈیٹ آ گیا تو آپ نے ایک ور آرٹیکل لکھا جو پہلے سے قریب تر تھا اس طرح جب گوگل کے سوفٹ بوٹس جب آپ کی سائیٹ کا وزٹ کریں گے تو وہ دیکھیں گے ایک طرح کے پیج ہیں وہ اسکو ڈپلیکیٹ یا ڈپلیکیٹ کے قریب تر بھی سمجھ سکتے ہیں اور ان دونوں پییجز کو رینک نہیں کریں گے اور نئے پیج کے آنے سے پہلے پیج کی رینکنگ بھی کم ہو جائےگی اس کا سب سے اچھا حل یہ ہے کہ ان پیجز کو ایک ہی کر دیں اور جب بھی اس سوفٹ وئیر کی نئی اپ ڈیٹ آئے نیا پیج بنانے کے بجائے اسی پیج کو اپ ڈیٹ کریں اور کبھی ملتے جلتے پیجز نہ بنائیں بلکہ ان ٹا پکس کوہی اپ ڈیٹ کرتے رہیں جو پہلے سے آپ کے پاس لکھے ہوئے ہیں ا ن جب بھی کبھی اپنے پیجز یا لنککس کو ری موو کریں تو گوگل ویب ماسٹر ٹولز میں جا کر مخصوص ٹول سے انکا لنک ریموو کرنا نہ بھولیں
گوگل ویب ماسٹر ٹولز میں جائیں اور ڈیش بورڈ میں جا کر اس کے لفٹ سائیڈ پر سرچ ٹریفک پر کلک کریں اس کے بعد سرچ کیوریز پر کلک کریں یہاں اپ کو ٹاپ پیجز نظر ائیں گے اس میں اپکی ویب سائیٹ کے تمام پیجز ہوتے ہیں اپ اس میں وہ پیجز تلاش کریں جو آپ کے مطابق ڈپلیکٹ ہو سکتے ہیں ان میں اپ دیکھیں کس پیج کے سرچ کیوریز زیادہ ہیں کس کی رینکنگ اچھی ہے اور کس کے کلکس زیادہ ہیں جس میں یہ سب اچھا ہو اسکو رہنے دیں دوسرے کو ڈیلیٹ کرکے اسکا کنٹنٹ پہلے میںڈال دیں
پھر جو آپ نے پیج ڈیلیٹ کیا ہے اسکا یو آر ایل گوگل ویب ماسٹر ٹولز میں موجود ری موو ٹول سے یوآر ایل ری موو کر دیں تاکہ ناٹ فاونڈ کا ایرر نہ آئے

فرض کریں آپ کے پاس دو آرٹیکل ہیں آپ اپنی ویب سائیٹ کی سرچ میں کوئی کی ورڈ لکھ کر بھی دیکھ سکتی کہ کون سے آرٹیلز ایک دوسرے کے قریب قریب ہیں اور اس پر آپ کو بہت سے کمنٹس مل رہے ہیں یا دونوں پر ٹریفک بھی ہے تواپ ایسا کر سکتے کہ ایک ارٹیکل کو ڈی رینک کر سکتے اس کے لئے ورڈ پریس میں ایک پلگ ان ہے جو ایسا کر سکتا ہے جو میٹا روبوٹس کے نام سے ہے اور ایک پلگ ہے جو آپ کے پیج کو دوسرے پیج پر ری ڈائیریکٹ بھی کر سکتا ہے اس لئے اپ ری ڈائریکٹ بھی کر سکتے اور ڈی رینک بھی کر سکتے اگر پچاس فیصد ایک دوسرے سے ارٹیکلز فرق ہو تو پھر بڑا ایشو نہیں ہے لیکن اگر اس سے زیادہ ہو تو ایشو بن سکتا ہے اور یہ سب کرنے کے بعد اگلے اپ ڈیٹ میں اپ کی ویب سائیٹ پانڈاسے ری کور ہو جائے گی اس لئے خاص طور پر ان پوانٹس پر توجہ دیں اور خاص طور پر ڈپلیکیٹ پیجز پر نظر رکھیں
اور ایک بات یہ بھی اہم ہے کہ اگر اگرآپ کو کوئی ای میل نہیں آتا کہ آپ کی سائیٹ ہٹ ہوئی ہے تو سمجھ لیں یہ مینوئل نہیں ہوا ہے اور یہ آٹومیٹک ہوا ہے اور آپ جب یہ سب چینجز کرتے ہیں تو آپ کی سائیٹ آٹومیٹک اوپر آتی ہے
اور اگر آپ کو میل آتی ہے تو اسکا مطلب ہے گوگل نے اپ کو مینوئیلی پینالٹی دی ہے اور اسکے لئے تھوڑا مختلف طریقہ ہے اس کے لئے اپ چینجز کرنے کے بعد گوگل کو ری کنسٹریشن کی میل کرنی پڑتی ہے

گوگل الگورتھم ہمنگ برڈ

ہم نے پہلے دو الگورتھم کو ڈسکس کیا اب یہ تیسرا لگورتھم ہے جو ایس ای او کے حوالے سے اہم ہے
اس کے علاوہ کچھ اور بھی ہیں جیسے
گوگل ڈی ایم سی اے پائیریٹ
گوگل ایکزیکٹ ڈومین میچ
گوگل نالج گراف

ہمنگ برڈ بنیادی طور پر ایک سرچ سسٹم ہے کوئی سپیسفک الگورتھم نہیں ہے گوگل کا سرچ سسٹم اس پر منتقل ہو گیا ہے، یہ دیکھتا ہے کہ موبائل پر کیسے ویب سائیٹ نظر آتی ہے، آپ کی ویب سائیٹ موبائل فرینڈلی ہونی چاہیے اور آج کل بلاگرز کے ٹیمپلیٹ اور ورڈ پریس کے تھیم بائی ڈیفالٹ موبائل فرینڈلی ہوتے ہیں اور آپ اگر دیکھنا چاہیں کہ اپ کی سائیٹ موبائل فرینڈلی ہے کہ نہیں تو اپ اسکو ایک سائیٹ پر دیکھ سکتے ہیں
http://mobiletest.me/

ڈیزائنر اس بات کا خیال رکھتے ہیں کہ آپ کی ویب سائیٹ ریسپونسیو ہو
جب آپ کوئی ورڈ گوگل میں ٹائپ کرتے ہیں تو گوگل آپ کو خود بھی سیجشن دیتا ہے اس کو بنیاد ی طور پر انسٹنٹ سرچ کہتے ہیں یہ گوگل سر چ کا فیچر ہے اسی طرح کے نئے نئے گوگل سرچ فیچرز آپ دیکھتے رہتے ہیں یہ سب کچھ ہمنگ برڈ کے وجہ سے ہو رہا ہے

ہمنگ برڈ یہ نہیں دیکھتا ہے کوئی خاص کی ورڈ کسی ویب سائیٹ پر موجود ہے کہ نہیں بلکہ وہ دیکھتا ہے یہ کی ورڈ کس قسم کا ہے اور یوزر اصل میں کہا جا رہا ہے جیسے کوئی ٹریولنگ سے متعلق کی ورڈ ہے تو ہمنگ برڈ جاننے کی کوشش کرتا ہے کہ یہ یوزر کا اس کی ورڈ سے کیا مقصد ہے کیا وہ صرف کسی ملک کے بارے میں جاننا چاہ رہا یا کسی ملک کا سفر کرنا چاہ رہا وغیرہ اسی طرح ایک گوگل کا فیچر ہے سرچ بائی وائس
بھی ہے جو کچھ آ پ بولیں گے گوگل اسکے مطابق سرچ کرے گا

یہ ڈائیریکٹ آپ کی ویب سائیٹ کو پینالائیز نہیں کرتا لیکن اگر آپ کی سائیٹ میں سرچ سے متعلق کوئی فیچر ہے تو آپ اس کو اپٹیمائز کریں جیسے ہم نے سٹرکچریڈ ڈیٹا کے متعلق پڑھا تھا

گوگل کے دوسرے اہم الگورتھم

گوگل ہمنگ برڈ کے بارے میں نے جانا اور آپ جانتے ہیں ہمنگ برڈ کی وجہ سے گوگل سرچ کتنی ایڈوانس ہو گئی ہے

گوگل ڈی ایم سی پاریٹ اپ ڈیٹ

یہ اس حوالےسے ہے کہ وہ لوگ جو دوسرے لوگوں کے سوفٹ وئیرز کو کریک کرکے اپنی سائیٹ پر لگاتے ہیںیا پائیریٹ کرکے اپنی سائیٹ پر دوسرے لوگوں کو ڈاون لوڈ کرواتے ہیں اسی سائیٹ خطرے میں اور گوگل کی طرف وہ سائیٹس خطرے میں ہیں اور انکو پینلٹیز کا سامنا ہو سکتا ہے اور سائیٹ وایڈ بین بھی ہو سکتے ہیں

گوگل ایکزیکٹ ڈومین میچ یا ای ایم ڈی

اس سے مراد ایسی ڈومینز ہیں جو ان ڈومین کی جیسی ہوتی ہے جو پہلے لی جا چکی ہیں ویسی ہی ڈومین لے کر ان میں کچھ تھوڑی تبدیلی کرکے لوگوں کو بیوقوف بھی بنایا جا سکتا ہے اور لوگ اسکو اصل ڈومین سمجھ کر دھوکہ بھی کھا سکتے ہیںگوگل ایسی ڈومین کے خلاف ایکشن لیتا ہے جیسے فرض کریں کوئی لے لے گوگل123 ڈاٹ کام تو لوگ سمجھیں گے یہ گوگل سرچ کا ہی کوئی حصہ ہے ایسی ڈومینز کو ری پورٹ کیا جا سکتا ہے وہ گوگل نے ان سائیٹ کو ڈیڈیکٹ کر تا ہے اس لئے ایسا کوئی نام نہ لیں جو پہلے استعمال ہو رہا ہے

ایک اور ہے گوگل نالج گراف

یہ اصل میں گوگل کا ایک فیچر ہے جس کی مدد سے گوگل نے نئے نئے سرچ فیچرز متعارف کروائے ہی

مینول ایکش کے ذریعے کیسے ویب سائیٹ کو ری کوری کیسے کریں

اگر آپ لفٹ سائیڈ پر دیکھیں تو اپ کو گوگل ویب ماسٹر ٹولز میں سرچ ٹریفک ہر کلک کرنے کے بعد اپ کو نظر آئے گا مینول ایکشن ، اکر کوئی مینول ایکشن آپ کی ویب سائیٹ کے خلاف کیا گیا ہے تو وہ آپ کو اس جگہ نظر آئے گا تو آ پ نے وہ سب چینجز کرنے ہیں جو آپنی ویب سائیٹ کو ری کور کرنے کے لئے بتائے گئے ہیں اسکے بعدآپ نے
آٹو میٹک میں یہ ہوتا ہے کہ جب آپ سب چینجز کر لیتے ہیں تو پھر اپ ڈیٹ کا انتظار کرتے ہیں کہ پانڈا یا پئینگوئن کو اپ ڈیٹ آئے گی تو آپ کی ٹریفک میں اضافہ ہوگا اور مینول میں اپنے چینلز کرنے کے بعد گوگل کو کنسٹریشن ری ریسٹ کرنی پڑتی کہ وہ اس یو آر ایل سے ہوتی
https://www.google.com/webmasters/tools/reconsideration?pli=1

اس کے بعد گوگل ایک دو ہفتے میں آپ کی ویب س سائیٹ کو دوبارہ گوگل سرچ میں شامل کرلے گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں