Monday, February 26, 2024
Homeصحتباجرہ؛ دل کی بیماری، بلڈ پریشر اور وزن میں کمی کے لئے...

باجرہ؛ دل کی بیماری، بلڈ پریشر اور وزن میں کمی کے لئے موثر ہے

روزمرہ کی خوراک میں باجرے کا استعمال انسانوں کے لیے بہت سے طبی فوائد کا حامل ہے اور اس دانے کے بارے میں ہونے والی متعدد تحقیقوں سے معلوم ہوا ہے کہ یہ وزن کو کنٹرول کرنے، ذیابیطس، امراض قلب اور جسم کے مدافعتی نظام کو مضبوط کرنے کے لیے فائدہ مند ہے۔

تحقیق کے مطابق باجرے میں وٹامنز، بیٹا کیروٹین اور دیگر غذائی اجزا پائے جاتے ہیں اور اسی لیے یہ غذائیت کی کمی اور موٹاپے کے مسئلے کا بہترین حل ہے۔

محققین کے مطابق باجرا فائبر سے بھرپور ہوتا ہے اور اس لیے یہ پیچیدہ نشاستہ یا کاربوہائیڈریٹس کا ایک اہم ذریعہ  ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ بڑے پیمانے پر قبول کیا گیا ہے کہ سارا اناج کھانے سے وزن کم کرنے میں مدد ملتی ہے۔ کچھ محققین کے مطابق باجرے کے بیجوں میں موجود فائبر اور بائیو ایکٹیو کیمیکل بھوک کو دبا کر اور کھانے کے درمیان ناشتے کی ضرورت کو کم کر کے وزن کم کرنے میں مدد کر سکتے ہیں۔

تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ باجرہ مدافعتی نظام کو مضبوط کرتا ہے اور انفیکشن سے بچاتا ہے۔ جوار میں موجود دھاتی عناصر جیسے آئرن، میگنیشیم، میگنیشیم، فاسفورس، پوٹاشیم، کاپر، سیلینیم اور زنک جسم کے معمول کے افعال کے لیے اہم ہیں۔

باجرہ کھانے سے جسم میں گلوکوز کی سطح کو برقرار رکھنے اور اسے منظم کرنے میں بھی مدد ملتی ہے۔ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ باجرے میں دوسرے اناج کے مقابلے میں کم گلائسیمک انڈیکس (جی آئی) ہوتا ہے، جس سے یہ خون میں شکر کی سطح کو برقرار رکھنے اور اسے دوسرے اناج کے مقابلے میں بہتر بناتا ہے۔

اسی طرح باجرے کے استعمال کو بھی دل کے لیے اچھا کہا جاتا ہے اور جوار کو اپنی روزمرہ کی خوراک میں شامل کرنے سے آپ کا بلڈ پریشر نارمل رہتا ہے اور اس میں موجود فائبر آپ کے کولیسٹرول کی سطح کو کم کرتا ہے جو کہ دل کی صحت کو فروغ دیتا ہے۔ .

محققین کے مطابق باجرے میں جسم سے فضلہ نکالنے کی بہت اچھی صلاحیت ہوتی ہے اس لیے اس میں کینسر مخالف خصوصیات بھی ہوتی ہیں۔

ماہرین کے مطابق باجرے کا باقاعدگی سے استعمال ہاضمے کو بہتر بناتا ہے اور قبض کو روکتا ہے جو کہ بہت سی بیماریوں کی بڑی وجہ ہے۔

متعلقہ مضامین

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

متعلقہ