نعت شریف

اپنی رحمت كے سمندر میں اُتَر جانے دے

اپنی رحمت كے سمندر میں اُتَر جانے دے

بے ٹھکانا ہوں اذل سے مجھے گھر جانے دے

اپنی رحمت كے سمندر میں اُتَر جانے دے

سوئے بیٹ ’ ہا لیے جاتی ہے ہوا بیٹ ’ ہا

بو دُنیا مجھے گمراہ نا کر جانے دے

بے ٹھکانا ہوں اذل سے مجھے گھر جانے دے

موت پر میری شاحیدون کو بھی رشک آئیگا

اپنے قدموں سے لپٹ کر مجھے مر جانے دے

اپنی رحمت كے سمندر میں اُتَر جانے دے

بے ٹھکانا ہوں اذل سے مجھے گھر جانے دے

خواہشیں زاد بہت ساتھ دیا ہے میرا

اب جدھر میرا محمد ہے اُدھر جانے دے

بے ٹھکانا ہوں اجل سے مجھے گھر جانے دے

بے ٹھکانا ہوں اذل سے مجھے گھر جانے دے

روک رضوان نا مظفر کو درے جنت پر

یہ محمد کا ہے منظور نظر جانے دے

بے ٹھکانا ہوں اجل سے مجھے گھر جانے دے

اپنی رحمت كے سمندر میں اُتَر جانے دے

بے ٹھکانا ہوں اذل سے مجھے گھر جانے دے

Apni Rehmat Ke Samandar Mein Utar Jaane De

Apni Rehmat Ke Samandar Mein Utar Jaane De
Be Thikana Hun Azal Se Muje Ghar Jaane De

Apni Rehmat Ke Samandar Mein Utar Jaane De

Suye Bat’ha Liye Jaati Hai Hawa E Bat’ha
Bu-E-Duniya Muje Gumrah Na Kar Jaane De
Be Thikana Hun Azal Se Muje Ghar Jaane De

Maut Par Meri Shahidon Ko Bhi Rashk Aayega
Apne Kadmon Se Lipat Kar Muje Mar Jaane De

Apni Rehmat Ke Samandar Mein Utar Jaane De
Be Thikana Hun Azal Se Muje Ghar Jaane De

Khwahishe Zaad Bahot Sath Diya Hai Mera
Ab Jidhar Mera Muhammad Hai Udhar Jaane De
Be Thikana Hun Ajal Se Muje Ghar Jaane De

Be Thikana Hun Azal Se Muje Ghar Jaane De

Rok Rizwan Na Muzaffar Ko Dare Jannat Par
Ye Muhammad Ka Hai Manzur-E-Nazar Jaane De
Be Thikana Hun Ajal Se Muje Ghar Jaane De

Apni Rahmat Ke Samandar Mein Utar Jaane De
Be Thikana Hun Azal Se Muje Ghar Jaane De

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button