نعت شریف

زندگی ہو مری رنگین دعا کیجیے گا

زندگی ہو مِری رنگین دعا کیجیے گا
دل کو حاصل رہے تسکین دعا کیجیے گا

چوم لے میری تڑپتی ہوئی پیشانی بھی
مسجدِ نبوی کا قالین، دعا کیجیے گا

میرا ہر ایک عمل ان پہ ہو مرتے دم تک
جو ہیں آقا کے فرامین ، دعا کیجیے گا

صدقۂ مولا عُمر مجھ کو عطا کر دے رب
دُور ہوں مجھ سے شیاطین، دعا کیجیے گا

اپنے دیدار سے مجھ کو بھی مشرف فرمائیں
گنبدِ خضریٰ کے وہ تین ، دعا کیجیے گا

فضلِ مولا سے چلیں سوئے جناں زہرا کے ساتھ
اپنی ملت کی خواتین ، دعا کیجیے گا

مرگِ توصیفؔ کی جو آپ کو مِل جائے خبر
“پڑھیے گا سورۂ ، یاسین! دعا کیجیے گا”

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button