How search engine works 76

سرچ انجنز کیسے کام کرتے ہیں

سرچ انجنز کیسے کام کرتے

پہلے دو حصوں میں ایس ای او کا ہلکا سا تعارف پیش کیا تھا اس حصے میں سرچ انجنز
کی بات کریں گے کہ سرچ انجنز کیسے کام کرتے ہیں اگر ہم سرچ انجنز آپٹیمائزیشن کو دو حصوں میں تقسیم کریں تو ایک حصہ سرچ انجنز ہوتا تو اس میں کسی کو شک نہیں ہونا چاہیے کہ ایس ای آؤ سرچ انجنز پر ہی بیسڈ ہے اس لئے سرچ انجنز اور وہ کیسے کام کرتے اس کو جانے بٖغیر ہم ایس ای آو کو نہیں جان سکتے
سرچ انجن ایک ایسا سوفٹ وئیر ہے جیسے انٹرنٹ پر انفارمیشن حاصل کرنے کے لئے بنایا گیا ہے
اس وقت گوگل ، یاہو، بنگ، ایسے سرچ انجنز ہیں جو انٹرنیٹ پر حکمرانی کر رہے ہیں
لیکن اس وقت گوگل کا کوئی مقابلہ نہیں اور 70 فیصد سرچ گوگل کے ذریعے ہو رہی اور دوسرے سرچ انجنز کے حصے میں 30 فیصد یوزرز آتے جو دوسرے سرچ انجنز کو استعمال کر رہے
کچھ مشہور سرچ انجنز کی مثال
——————————
Google
Yahoo.
Baidu.
AOL.
Ask .
Excite.
DuckDuckGo.
وغیرہ
اب بات کرتے ہیں سرچ انجنز کام کیسے کرتے
اگر ہم کہیں سرچ انجنز تین چیزوں پر بیس کرتی ہیں تو بےجا نہ ہوگا جن میں

کرالر یا سپائیڈر

انڈیکسر

رینکنگ الگورتھم

کرالر یا سپائیڈرز کیا کام کرتے ہیں

آج جانتے ہیں انٹرنٹ پر لاکھوں ویب سائیٹس موجود ہیں اور ان گنت ویب سائیٹس روزانہ بن رہی ہیں اور کرالر یا سپائیڈرز ان ویب سائیٹس کا سورس کوڈ پڑھتی ہیں یا دوسرے معنوں میں آپ کہہ سکتے ” کرالنگ” کرتے ہیں اور اس کے بعد سرچ انجن کے لوکل سرور میں سٹور کر دیا جاتا

سورس کوڈ

یہاں الفاظ آئے “سورس کوڈ” تو سورس کوڈ سے مراد وہ کوڈز ہوتے جن سے ویب سائیٹ بنائی جاتی ہے، کسی بھی ویب سائیٹ کے یا کسی بھی کسی پیج کا سورس کوڈ دیکھنا ہو تو اس پیج پر جا کر ماؤس سے رائیٹ کلک کریں اور اس کے بعد جو چھوٹی سی ونڈو اوپن ہوتی ہے اس میں ” ویو سورس” لکھا ہوا آپ کو نظر آئے گا ااس پر کلک کرکے آپ اس پیچ کا سورس کوڈ دیکھ سکتے ہیں
یہاں یہ بتانا بھی ضروری ہے کہ کرالر یا سپائیڈر کا کام صرف کرالنگ کرنا ہوتا ہے سورس کوڈ میں کیا لکھا یا کیسے لکھا گیا ہے اس کو ان باتوں سے غرض کوئی نہیں ہوتی ہے

انڈیکسر کیا کام کرتے

کرالر یا سپائیڈر کے بعد انڈیکسر کی باری آتی کرالر یا سپائیڈر نے جو ڈیٹا ، لوکل سرور پر سٹور کیا تھا انڈیکسر وہاں سے ڈیٹا آٹھا کر ویب سائیٹس کی انڈیکسنگ کرتا ہےجس قسم کی ویب سائیٹ ہوگئ وہ اسکی کیٹگری میں اس ویب سائیٹ کو انڈیکس کرے گا جیسے فیشن کی ویب سائیٹ ہے تو اسے فیشن کی کیٹگری میں انڈیکس کرے گا ہیلتھ کی ویب سائیٹ ہے تو اسکو ہیلتھ کی کیٹگری میں انڈیکس کرے گا، انڈیکس کرنے کے بعد سارا ڈیٹا مین سرور میں سٹور کردے گا

رینکنگ الگورتھم کیسے کام کرتی ہے

فرض کریں ایک یوزر اپنے براؤز کے ذریعے ایک کیوری  ( کوئی جملہ یا چند الفاظ کا مجموعہ) کسی سرچ انجن میں ٹائپ کرکے سرچ کرتا ہے تو کچھ ویب سائیٹ ٹاپ پر نظر ائیں کیوں کہ وہ میعاری ویب سائیٹس تھیں انکی ایس ای اؤ اچھی تھی ان پر ایس ای اؤ پراسس اچھا ہوا تھا اور ان میں کوئی بلیک ہیٹ ایس ای او ٹیکنیک استعمال نہیں ہوئی تھی  اور کچھ ویب سائیٹ نیچے نظر آتی ہیں اور کچھ بہت نیچے نظر آئیں تو یہ سب رینکنگ کرنا، رینکنگ الگورتھم کے ذریعے ہوتا ہے اور رینکنگ الگورتھم اپنے خاص طریقہ کار سے یہ طے کرتا ہے کہ کس ویب سائیٹ کو سرچ انجنز میں کون سی جگہ دینی چاہیے اس لئے آپ کو اچھی ویب سائیٹس ٹاپ پر نظر آتیں اور اس طرح ویب سائیٹس اپنے معیار کے مطابق اوپر اور نیچے جاتی رہتیں ہیں ہر سرچ انجن کا اپنا رینکنگ الگورتھم  کا طریقہ کار ہے اور اپنے رینکنگ الگورتھم کے ذریعے وہ اپنی سرچ انجن میں کسی ویب سائیٹ کو ٹاپ پر رکھتا ہے اور کسی کو نیچے اگر اپ ایک ہی کیوری کو مخلتف سرچ انجنز میں سرچ کرکے دیکھیں تو رزلٹ مختلف نطر آئے گا ہر سرچ انجن اپنے طریقہ کار کے مطابق ویب سائیٹ کو رینکنگ دیتی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں