seo mistakes to avoid 208

ایس ای آؤ کرتے ہوئے ہمیں کونسی غلطیوں سے بچنا چاہیئے

کی ورڈ ری سرچ کرتے ہوئے ہم سے کیا غلطی ہوتی ہے ہم گوگل ایڈورڈ میں جاتے مختلف سیٹنگز کے بعد اس میں اپنا کی ورڈ اس میں انٹر کرتے اور پھر اس میں سرچز دیکھتے فرض کریں سرچز پچاس ہزار ہیں اور ساتھ لکھا ہے لو کمپیٹئش اور ہم کہتے یہ زبردست کی ورڈ مل گیا ہے بڑی زیادہ سرچز ہیں اور کمپیٹیشن بھی لو ہے غلطی یہ ہوتی ہے ہم وہ “کمپیٹشن” سلیکٹ کر لیتے جو رینکنگ کا نہیں ہوتا وہ ایڈروڈ کمپین کا کمپیٹن ہوتا کہ اس کی ووڈ پران لوگوں کو کس جگہ ، ملتی جو اس کی ورڈ پر اپنی کمپین گوگل ایڈرڈ کے ذریعے چلا رہے ہوتے اور ہم اس کو رینکنگ کا کپیٹیشن سمجھ کر رینک کر رہے ہوتے
جیسے اگر ہم کسی کی ورڈ کا کمپیٹیشن دیکھ رہے تو وہ اگر ” لو ” ہے تو ہم سمجھتے یہ کی ورڈ اچھا ہے جبکہ وہ آصل میں ہائی کپیٹیشن کی ورڈ بھی ہو سکتا جہاں ہم دیکھ رہے اس کو اس جگہ نہیں دیکھنا چاہیے کی ورڈ کمپیٹشن کہاں دیکھنا چاہیے اس پر کل بات ہوگی

ویب سائیٹ کا ٹاپک چنتے ہوئے ہم سے کیا غلطی ہوتی ہے

ویب سائیٹس کو اگر ہم کچھ اقسام میں تقسیم کریں تو یہ 3 اقسام اہم ہوں گے

پروڈیکٹ بیسڈ نچ ویب سائیٹ

Product Based Niche Website

اس پر سائیٹ بنانے کے لئے آپ ایک پورڈیکٹ ایموزون وغیرہ سے آتھاتے ہیں فرض کریں میں نے ویٹ لاس کا کوئی پراڈیکٹ آیا آپ نے اس پراڈیکٹ پر ایک ویب سائیٹ بنا لی اور اسکو کی ورڈز کی مطابق رینک کرنا ہوگا،

نچ ویب سائیٹ

Niche Website

اس میں نے پروڈیکٹ پر نہیں بنائی سائیٹ بلگہ ایک ” نیچ” پر سائیٹ بنائی جیسے ” ویٹ لایس” پر بنائی یا سکن پر بنا لی پھر آپ نے ان پرڈیکٹ پر کام کرنا ہوگا جو ویٹ لائیس اور سکن کے بارے میں ہیں

برینڈ

Brand Website

یہ ایک بڑی ویب سائیٹ ہوتی ہے یہ بھی ایک چیز کو سامنے نہیں رکھتے اس میں صرف ویٹ لائیس نہیں آئے گا یا صرف سکن نہیں ائے گا یہ پورے ” ہیلتھ” کو کور کرے گی اس میں ہیلتھ کا سب کچھ آ جائے گا

اور ہم کیا غلطی کرتے۔ ہم سیدھا ” برینڈ” پر سائیٹ بنا لیتے جس میں سب کچھ آتا اور یہی ہماری غلطی ہوتی نہ ہم اتنے سارے کی ورڈز رینک کر سکتے نہ ہمارے پاس اتنے ذرائع ہوتے نہ اتنا ٹائم اور کیا ہوتا ہم ناکام ہی ہوتے جاتے اور آخر کام چھوڑ دیتے پھر کہتے ہیں ایس ای اور میں کچھ نہیں رکھا ظاہر ہے جب آپ کا ہہلا قدم ہی برینڈ ویب سائیٹ سے شروع ہوگا تو ناکامی مقدر تو بنے گی ظاہر ہے صحت یا ہیلتھ اتنا بڑا ٹاپک وہ آپ سے کور نہیں ہو سکتا اس کے آگے انتی شاخیں نکلتیں جس پر آپ کی معلومات نہیں ہوتی اور نہ علم ہوتا اور ہلیتھ کی شاخوں میں مزید شاخیں نکلتیں

تو آپ نے کرنا کیا ہے یا تو آپ ” پراڈکٹ” پر کام کرو یا ” نیچ” پر کام کرو
برینڈ پرکام کرنا آپ کے بس کی بات نہیں نہ آپ کے اتنے ذرائع ہیں نہ علم

اب تک ہم نے سیکھا کہ کیا کرنا ہے اور اب ہم بات کریں گے کہ کیا کیا نہیں کرنا اب تک ہم سے جو سیکھا وہ وائیٹ ہیٹ ایس ای اؤ کہلاتا ہے

کوئی بلیک ہیٹ ایس ای او ٹیکنیک استعمال نہیں کرنی ہے

کلاکنگ نہیں کرنی ( ایسی ٹیکنک جو سرچ انجنز کو دیکھا رہے ہیں اور یوزر سے چھپا رہے ہیں یا یوزر کو کچھ اور دکھا رہے اور سرچ انجنز کو کوئی اورپیج دکھا رہے)
کمنٹ سپیمنگ نہیں کرنی ہے جب بھی بلاگ پر کمنٹ کریں وہ ایسے کمنٹس ہوں کہ ایسا نہ لگے کہ ہم صرف بیک لنک بنانے کے لئے کمنٹس کر رہے اور بوٹس اور سوفٹ وئیر استعمال نہ کریں
کی ورڈ سٹفنگ نہ کریں – یعنی اپنے مخصوص کی ورڈ کو ارٹیکل کے دو فیصد سے زیادہ نہیں ہونا چاہیے
یعنی کی ورڈ ڈینسٹی ، ارٹیکل کا دو فیصد سے زیادہ نہ ہو اگر آپ نے کی ورڈ سٹفنگ کو تو آپ گوگل پینگوئین کا شکار ہو سکتے
ٹائٹیل ، ڈسکرپشن،ٹیگز میں مخصوص کی ورڈز کو دو بار استعمال نہ کریں
اووآپٹیمازئیشن نہ کریں یعنی چیزوں کو بیلنس رکھیں کی ورڈز حد سے زیادہ ری پیٹ نہ کریں لنکس زیادہ استعمال نہ کریں، کم ہو جائے تو اتنا مسئلہ نہیں ہوتا جتنا زیادہ کرنے سے ہوتا ہے
کی ورڈز ری پیٹ نہ کریں
زیادہ ایڈز استعمال نہ کریں
کاپی نہ کریں – یہ اپ کے لئے مسائل پیدا کریں گے آپ کی سائیٹ ڈی انڈیکس اور بند بھی ہوسکتی ہے

لنکس نہ خریدیں

پرائیویٹ بلاگ نیٹ ورک نہ بنائیں پی بی این نہ بنائیں یہ ایسا بلاگ ہوتا ہے جو کچھ بلاگز کا نیٹ ورک بنا کر بیک لنکس بناتے ہیں یہ کچھ جگہ تو کامیاب ہو سکتے کہ لیکن اکثر ان نیچرل ہونے کی وجہ سے لوگ اکثر نقصان کر بیٹھتے ہیں

جو باتیں ذہن میں رکھنی ہیں

پوسٹ ٹائیٹل پچاس الفاظ کا ہونا چاہیے اس سے زیادہ کے الفاظ گوگل میں نظر نہیں آتے
میٹا ڈسکرپشن ایک سو چالیس الفاظ کی ہونی چاہیے اس سے زیادہ کی گوگل میں نظر نہیں ائے گی
پرما لنکس چار الفاظ تک بہتر رہتا ہے
کی ورڈ ڈینسٹی 2 فیصد سے زیادہ کی نہ ہو

تین سے دس انٹرلنکس ایک ارٹیکل میں ہونے چاہیں اس سے زیادہ  نہیں

انٹرلنکنگ آرٹیکل کے شروع یا اخرمیں نہ کریں بلکہ آرٹیکل کے درمیان میں کریں
اگر ارٹیکل ہزار ورڈز کے زیادہ کا ہے تو پھر دس لنکس تک کر سکتے اگر کم الفاظ کا ہے تو پھر تین سے پانچ لنکس دینے چاہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں